Mujhy Jena Ata Ha Ep No 1 | Urdu Novels

Mujhy Jena Ata Ha Ep No 1 | Urdu Novels



مجھے جینا آتا ہےاز قلم درشہوار
قسط نمبر 1


ایک سال سے اوپر ھو گیا پر ابھی تک کوئی خبر نہیں ۔لڑکی ذات ھے ہم اسے کب تک رکھےگے اگر پولیس کیس ھو گیا تو
اس کو بھی کچھ یاد نہیں کون ھے یہ
کہاں سے آئی
ثانیہ میں پتہ کر رہا ھوں نا
کیوں میرا دماغ خراب کر رہی ھو
نہیں بنتا کیس بن بھی گیا تو شاہ ذین ہیں ناں وہ سنبھال لے گا
ارشد صاحب کو اپنی بیوی کی باتوں پر غصہ آ گیا
ایک سال کا رٹا جملہ سن سن کر تنگ آ گئے تھے
ہاں ہاں میں پاگل ھوں جو بولتی رہتی ھوں
جب کچھ ھوا تو سمجھ آ جائے گئی
پتہ نہیں گھر سے بھاگی ھے یا گھر والوں نے نکال دیا۔
جہاں آرا بیگم کو کبھی بات کرنے کا سلیقہ نہیں آیا۔
یہ سوچ ارشد صاحب کی تھی اور کچھ غلط نہیں
دیکھو بیگم بچی ایک سال سے یہاں ھے ابھی تک ہمیں اس سے کوئی شکایت نہیں ملی
ارشد صاحب نے بیگم کو یاد کروایا
وہاں کھڑی فریال میں اور سنے کی ہمت نہیں تھی وہ چھت پر آ گئی
دیکھو بیگم بچی کو رولا دیا کم سے کم بولتے وقت اگے پیچھے بھی دیکھلیا کرو
ارشد صاحب نے بیگم کو گھورتے ھوئے کہا
اب مجھے کیا پتہ وہ کیچن میں ھے
بس رہنے دو بیگم
ارشد صاحب اٹھ کے باہر چلے گئے
انٹی کو کتنی نفرت ھے مجھ سے سب نے قبول کیا سوائے ان انکے کیسے الفاظ استعمال کیے ہیں
چاند تم سن رہے رہےھو نا تم تو میرے بارے میں سب جانتے ھو نا
میں ایسی تو نہیں ھوں نا
میں مانتی ھوں جھوٹ بول کے سال سے رہ رہی ھوں
پر میں مجبور ھوں
میری عزت یہاں محفوظ ھے
دیکھو چاند جن لوگوں کو میری رکھوالی کرنی چاہئے تھی
وہی لٹیرے ہیں
وہ کافی دیر سے چاند کو دیکھ کے اس سے باتیں کرتی رہی
یار تم بولتی کیوں نہیں کتنی بدتميزی کر گئ ھے
کیا کیاکرو گی گی بول کر
حنا میں بھی اس کی طرع بولنے لگ گئ تو اس میں مجھ میں کیا فرق رہ جائے گا
فریال نے سامنے پڑے لیز کے ریپر کو دیکھتے ھوئے کہاجو کچھ دیر پہلے ماریہ کھا کھاکر اس کے پاس پھینک گی تھی
فریال مجھے آج بتا دو کیا چیزھو تم
حنا نے فریال کا کندھا ہلا کر کہا
تمھاری طری انسان
مجھے نا تم کبھی کبھی پاگل لگتی ھو نام تمھں اپنا یاد نہیں
کہاں سے آئی کون ھو یہ تو یاد نہیں فلسفے سارے یاد ہیں
حنا نے پانی کی بوتل نکال کر فریال کی طرف بڑھائی خود کچھ لکھنے لگی
تم کیا لکھ رہی ھو فریال نے پانی پیتے ھوئے پوچھا اور بوتل حنا کو دے دی
تمھارے فلسفے
حنا نے جواب دیا
فریال ہنسی چلو تم ہنسی تو حنا بھی مسکرا دی
آج برسوں بعد حنا نے فریال کو ہنستے دیکھا تھا
ایسے کیا دیکھ رہی ھو؟
کچھ نہیں بس ایسے ہی ہنستے رہاکرو
حنا نے نےمسکراتے ھوئے کہا
چلو فریال گھر چلیں ورنہ پاپا غصہ ھوں گے
دونوں پوائیٹ کا ویٹ کرنے کے لئے باہر آ کر کھڑی ھوگئ
حنا تمھیں کچھ محسوس ھوا؟
فریال نے ناک سوکیڑتےھوئے کہا
نہیں کیوں مجھے تو کچھ محسوس نہیں ھوا حنا نے بھی محسوس کرنے کی کوشش کی
#اے لوگو !!!
انسان کی نسبت اللّٰہ سے تعلق جوڑنا
کیونکہ اللہ دھتکارتا نہیں ہے ۔۔
اس کی طرف ہاتھ بڑھاؤ۔
تو وہ خود آگے بڑھ کر تھام لیتا ہے ۔۔۔
"یہ سمیل کیسی ہے یار حنا میرا دم گھٹ رہا ہے " فریال نے اپنے ہاتھوں سے چہرے پر ہوا دیتے ہوئے کہا۔۔
"کیا ہوا فریال کوئی سمیل نہیں ہے تمہارا وہم ہے "
حنا نے آگے ہو کر فریال کا ہاتھ پکڑا اور تھوڑی دیر میں فریال لرکھڑاتی ہوئی زمین پر گر گئی ۔۔۔
"فریال کیا ہوا فریال اٹھو ۔۔ آنکھیں کھولو " حنا کے تو صحیح معنوں میں ہاتھ پاؤں پھول گئے تھے فریال کوبیہوش دیکھ کر اس نے جلدی سے شاہ زین کو کال کی کیونکہ بابا کو فون کرتی تو آنے میں دیر ہو جاتی اور بھائی کا یہاں نزدیک میں ہی آفس تھا ۔۔
"السلام علیکم " شاہ زین کی مصروفیت سے بھرپور آواز آئی ۔۔
"وعلیکم السلام بھائی آپ کہا ہے بھائی جلدی سے آجائے ہم اپنی یونی کے باہر پوائنٹ آریہ پر کھڑے ہیں فریال ایک دم بیہوش ہو گئی ہے بھائی پلیز آجائے "
شاہ زین جو واقی میں مصروف تھا بہن کی خوف سے بھری آواز سن کر پریشان ہو گیا اور فوراً اپنا کام سمیٹا اور گاڑی کی چابی لے کر باہر کی طرف بھاگا ۔۔
!.....................!
فریال کو فوراً ہسپتال پہنچایا گیا ۔۔
اور کچھ ہی دیر میں ڈاکٹر باہر آئے ۔۔
"دیکھئے شاہ زین ابھی ہم سمجھ نہیں پارہے کہ کیا ہوا ہے ان کو لیکن جتنا آپ نے بتایا ہے اس سے مجھے لگ رہا ہے ان کو سانس کا مسئلہ ہے"
"آپ یہ کیا کہہ رہے ہیں ہمیں کبھی ایسا محسوس نہیں ہوا کہ ان کو سانس کا مسئلہ ہے "
"دیکھے یہ میرا اندازہ ہے ابھی کچھ ٹیسٹ کیے ہیں رزلٹ ا جائے پھر کچھ بتا پاؤ گا ۔"
"ہوں ۔۔ ٹھیک ہے میں یہی ہو جب رپورٹ ا جائے تو آپ مجھے بولا لیجئے گا" شاہ زین باہر چلا گیا جہاں حنا موجود تھی وہ گھر میں فون کر چکا تھا اور ان کومنع بھی کردیا تھا آنےسے۔
"حنا تم بھی گھر جاؤ رافع ابھی آرہا ہے تمہیں پک کرنے" شاہ زین حنا کے گھرچلے جانے کے بعد کافی دیر چیئر کی بیک 
سے ٹیک لگا کر ہسپتال کی چھت کو گھورتا رہا ۔


Continued........

  10/05/20   2قسط نمبر

۔

0/Post a Comment/Comments

Please Do Not Enter Any Spam Link In THe Comment box.

Previous Post Next Post